جمعرات , 16 اگست 2018

ضلع بھر میں محکمہ جنگلات جہلم نے مون سون شجرکاری مہم کے دوران فوج ، محکمہ صحت ، تعلیم اور نجی اداروں کو ستر ہزارسے زائد پودے تقسیم کیے

جہلم 6اگست ( نمائندہ جہلم پوسٹ ) ضلع بھر میں محکمہ جنگلات جہلم نے مون سون شجرکاری مہم کے دوران فوج ، محکمہ صحت ، تعلیم اور نجی اداروں کو 70000 سے زائد پودے تقسیم کیے ہیں، نجی اداروں کے ساتھ مل کر جہلم شہر کو سر سبز کرنے کے حوالے سے عملی اقدامات جاری ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سب ڈویژنل فارسٹ آفیسر جہلم سدھیر احمد مغل نے ہیومن ویلفیئر آرگنائزیشن، المرکزسینٹر جہلم ، جہلم سٹی لائن کلب، این جی او کیئر ٹیکر، حمزہ بیگ ویلفیئر سوسائٹی کے ممبران کے ہمراہ اجلاس کی صدارت کے ہوئے کیے ۔ ایس ڈی ایف او سدھیر مغل نے بتایا ہے کہ محکمہ جنگلات اور نجی ادارے مل کر 4000 سے زائد پودے جہلم میں لگائیں گے۔ انہوں نے کہا ہے کہ 14 اگست کے موقع پر بھی 8000 پودے لگائیے جا رہے ہیں جو ماحولیاتی آلودگی کی روک تھام میں مددگار ثابت ہونگے ۔ اجلاس میں سماجی کارکن آصف ملک، ڈاکٹر اسد مرزا، ایڈووکیٹ فرحت ضیاء اور دیگر موجود تھے۔ سدھیر مغل نے بتایا کہ شجرکاری کے لیے قومی،علاقائی اور محلے کے سطح پر اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ، جہلم کے عوام اپنے اپنے گھروں میں بھی پودے لگا کر 14 اگست کو منائیں، 20 سے زائد اقسام کے پودے محکمہ جنگلات سے 8 روپے فی کس کے حساب سے حاصل کیے جا سکتے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ درخت کاربن کو جذب کرتے ہیں اور آکسیجن فراہم کرتے ہیں۔ لیکن جیسے جیسے جنگلات کم ہو رہے ہیں ویسے ویسے کاربن کی مقدار ماحول میں زیادہ ہو رہی۔ وہ علاقے جہاں درخت اور پودے موجود نہیں ہیں وہاں مختلف مشینوں اور صنعتوں کی وجہ سے ماحول میں تیزی سے آلودگی پھیلتی ہے ۔ نیز درخت نہ ہونے کی وجہ سے ایسے علاقوں میں آکسیجن کی کمی ہوجاتی ہے اور نتیجے کے طور پر جانداروں کو سانس لینے تک میں مشکلات ہوتے ہیں۔ درخت نہ ہونے سے بیماریاں تیزی سے پھیلتی ہیں ،ان بیماریوں میں جان لیوا بیماریاں بھی موجود ہیں۔